Latest Article

header ads

9th_Biology_Chapter : 4



9thBIOLOGY             Chapter No 4           C h TAHIR RAFIQ




Ch Tahir Rafiq

Biology : 9th
CHAPTER NO. 4
سیلز اور ٹشو
                                 SHORT QUESTIONS & ANSWERS
مائیکروسکوپی سے کیا مراد ہے؟
سوال :
مائیکروسکوپی :-
                   : مائیکروسکوپ کا استعمال مائیکروسکوپی کہلاتا ہے۔پہلی مائیکروسکوپ زکاریاسجانسن نے 1595 میں ہالینڈ میں بنائی۔ یہ مائیکروسکوپ ایک سادہ ٹیوب تھی جس کے دونوں کناروں پر لینز لگے تھے اور اسکی میگنیفیکیشن کی پاور تین گنا سے نو گنا کے درمیان تھی۔
جواب :-
میگنی فیکیشن اور ریزولیوشن سے کیا مراد ہے؟
سوال :
میگنی فیکیشن :-
                   : میگنی فیکیشن سے مراد کسی شے کی ظاہری جسامت میں اضافہ ہے۔
ریزولیوشن :-
                : ریزولیوشن سے مراد کسی عکس کا صاف نظر آنا ہے۔ یہ وہ کم سے کم فاصلہ ہے جس میں موجود اشیا علیحدہ علیحدہ دیکھی جا سکتی ہیں۔
جواب :-
انسانی آنکھ کی ریزولیوشن بیان کریں۔
سوال :
انسانی آنکھ ان دو مقامات کے درمیان فرق دیکھ سکتی ہے جن کا درمیانی فاصلہ کم از کم   ہو۔ یہ انسانی آنکھ کی ریزولیوشن ہے۔
جواب :-
لائٹ مائیکروسکوپ کی میگی فیکیشن اور ریزولیوشن بیان کریں۔
سوال :
لائٹ مائیکروسکوپ کی میگی فیکیشن :-
                                         لائٹ مائیکروسکوپ کی میگنی فیکیشن 1500 ہے۔ یعنی یہ دھندلاہٹ پیدا کیے بغیر اشیا کو 1500 گنا بڑا دکھاتی ہے۔
لائٹ مائیکروسکوپ کی ریزولیوشن :-  لائٹ مائیکروسکوپ کی ریزولیوشن مائیکرومیٹر اور ہے۔ یعنی یہ سے چھوٹی اشیا کو واضح نہیں دکھا سکتی۔ کم و بیش یہ سب سے چھوٹی بیکٹیریا کا سائز ہئ۔ بیکٹیریا کا عکس تو کئی گنا بڑھایا جا سکتا ہے لیکن لائٹ مائیکروسکوپ اس کی اندانی ساخت کا مطالعہ نہیں کر سکتی۔
جواب :-
الیکٹران مائیکروسکوپ کی ریزولیوشن لکھیں۔
سوال :
اس مائیکروسکوپ کی ریزولیوشن لائٹ مائیکروسکوپ کی نسبت بہت زیادہ ہوتی ہے۔ جدید الیکٹران مائیکروسکوپ نینو میٹر جتنی اشیا کو بھی واضح کر سکتی ہے۔ الیکٹران مائیکروسکوپ سے انفرادی ایٹم بھی دیکھے جا سکتے ہیں۔  سیلز ، آرگنیلیز حتیٰ کہ ڈی این اے اور پروٹین کے مالیکیولز بھی جسامت میں ایٹمز سے بہت بڑے ہوتے ہیں۔
جواب :-
ٹرانسمشن الیکٹران مائیکروسکوپ کے بارے میں آپ کیا جانتے ہیں؟
سوال :
ٹرانسمشن الیکٹران مائیکروسکوپ :- ٹرانسمشن الیکٹران مائیکروسکوپ اشیا کو تقریباً 250000 گنا بڑا کر کے دکھا سکتی ہے ۔ اس مائیکروسکوپی میں نمونہ جس کا مطالعہ کرنا ہوتا ہے اس کو نہایت باریک تراشوں میں کاٹا جاتا ہے۔جب الیکٹران  شعاع نمونہ سے گزاری جاتی ہے تو الیکٹرانز اس سے ٹکراتے ہیں اور اس میں سے گزرجاتے ہیں۔ یہ الیکٹرانز لینز سے گزر کر بڑا عکس بنا دیتے ہیں سیل کی اندونی ساختوں کے تفصیلی مطالعہ کیلئے ٹرانسمیشن الیکٹران مائیکروسکوپ استعمال ہوتی ہے۔
جواب :-
سکیننگ الیکٹران مائیکروسکوپ کے بارے میں آپ کیا جانتےہیں؟
سوال :
سکیننگ الیکٹران مائیکروسکوپ:- اس مائیکروسکوپی میں سطح پر میٹل پارٹیکل کی تہہ چڑھا دی جاتی ہے اور الیکٹران کی شعاع اس سطح کو سکین کرتی ہے۔یہ مائیکروسکوپ سیلز کی سطحوں کی سطح دیکھنے کیلئے استعمال ہوتے ہیں۔
جواب :-
رابرٹ ہک کا سیل تھیوری کا کردار بیان کریں۔
سوال :
رابرٹ ہک کا سیل تھیوری کا کردار:- 1965 ء میں ایک برطانوی سائنسدان رابرٹ ہک نے پہلی مرتبہ سیل کو بیان کیا۔ یعنی سیل رابرٹ ہک کی دریافت ہے۔ اس نے کارک کی باریک کاشوں کا معائنہ کرنے کیلئے خودساختہ لائٹ مائیکروسکوپ استعمال کی۔ اس نے اس میں شہد کی مکھیوں کے چھتہ کی طرح خالی خانے دیکھے کارک میں موجود ان خانوں کو رابرٹ ہک نے سیلولائی کا نام دیا جس سے سیل کی اصطلاح سامنے آئی۔
جواب :-
شیلیڈن اور شوان کی سیل تھیوری بیان کریں۔
سوال :
شیلیڈن اور شوان کی سیل تھیوری:- شلیڈن جرمن ماہر نباتات تھا۔ اس نے 1838ء میں پودوں کے ٹشوز کا مطالعہ کیا اور سیل تھیوری کا پہلا بیان جاری کیا۔ اس کے مطابق تمام پودے ایسے انفرادی سیل کا مجموعہ ہیں جو کہ مکمل طور پر آزاد ہوتے ہیں۔ شلیڈن کے بیان کے ایک سال بعد 1839ء میں ایک جرمن ماہرحیوانات تھیڈرشیوان نے بیان دیا کہ جانور بھی انفرادی سیل سے بنتے ہیں۔ سیل تھیوری کو ابتدائی شکل میں شیلڈن اور شیوان نے پیش کیا جس کے مطابق تمام جاندار زندہ سیلز کے بنے ہوتے ہیں۔
جواب :-
سیل تھیوری کے اصول بیان کریں۔
سوال :
سیل تھیوری کے اصول:-
1۔ تمام جاندار ایک یا ایک سے زیادہ سیلز پر مشتمل ہوتے ہیں۔
2۔ سب سے چھوٹی زندہ چیز سیل ہے۔ یہ تمام جانداروں کی تنظیم کی بنیادی اکائی ہے۔
3۔ سیلز صرف پہلے سے موجود سیلز کی تقسیم کے ذریعے ہی وجود میں آتے ہیں۔
جواب :-
سب سیلولر اے سیلولر پارٹیکلز کے بارے میں آپ کیا جانتے ہیں؟
سوال :
سیل تھیوری کے پہلے اصول کے مطابق تمام جاندار ایک یا ایک سے زیادہ سیلز کے بنے ہوتے ہیں لیکن وائرسزپرائیونز اور وائرائڈز کی دریافت نے اس بیان کی تردید کی۔یہ تمام سیلز کے نہیں بنے ہوتے بلکہ یہ اے سیلولر پارٹیکلز ہیں جن میں میٹابولزم نہیں ہوتالیکن ان میں جانداروں کی کچھ خصوصیات پائی جاتی ہیں جیسے کہ یہ اپنی تعداد بڑھاتے ہیں اور اپنی خصوصیات اگلی نسلوں میں منتقل کرتے ہیں۔
جواب :-
فلوئڈ موزیک ماڈل بیان کریں۔
سوال :
فلوئڈ موزیک ماڈل کے مطابق:
1۔ لپڈز کی ترتیب اس طرح ہوتی ہے کہ ان کی ایک دوہری تہہ بنتی ہے۔
2۔ لپڈز کی اس دوہری تہہ میں پروٹینز مکمل طور پر ڈوبی ہوتی ہیں اور کچھ یہاں سے سیل کےاندر یا باہر کی طرف بھی نکلی ہوتی ہیں یہ پروٹینز ایسی گزرگاہیں ہیں جہاں سے خصوص مالیکیولز سیل کے اندر یا باہر جا سکتے ہیں۔
3۔ سیل ممبرین کی پروٹینز اور لپڈز کے ساتھ کاربوہائڈریٹس کی تھوڑی سی مقداریں لگی ہوتی ہیں۔ یوکریوٹک سیلز میں لپڈز کی دوہری تہہ کے اندر کولیسٹرول بھی پایا جاتا ہے۔ یوکریوٹک سیل میں مختلف آرگنیلیز مثلاً مائٹوکانڈریا، کلوروپلاسٹس، گالجی اپریٹس اور اینڈوپلازمک ریٹی کولم بھی سیل ممبرین میں لپٹے ہوتے ہیں۔  
جواب :-
سیل ممبرین کا فعل بیان کریں۔
سوال :
سیل ممبرین سیمی پرمی ایبل ممبرین ہے جو باڑ کے طور پر صرف چند مالیکیولز کو ہی گزنے دیتی ہےجبکہ زیادہ تر کو روک لیتی ہے۔ سیل ممبرین اس طرح سیل کی اندرونی کیمیائی ساخت کو برقرار رکھتی ہے۔ سیل ممبرین کا ایک اہم فعل دوسرے سیلز سے کیمیاےی پیغامات کو وصول کرنا اور دوسرے سیلز کی شناخت کرنا ہے۔
جواب :-
نیوکلیر اینویلوپ سے کیا مراد ہے؟
سوال :
نیوکلیر اینویلوپ:- نیوکیئس ڈبل ممبرین میں لپٹا ہوتا ہے اس ڈبل ممبرین کو نیوکلیر اینویلوپ کہتے ہیں۔ جیسے پلازما ممبرین میں سوراخ ہوتے ہیں ایسے ہی نیوکلیر اینویلوپ میں بھی کئی سوراخ ہوتے ہیں جو اس کو ایک سیمی پرمی ایبل ممبرین بناتے ہیں۔
جواب :-
نیوکلیوپلازم سے کیا مراد ہے؟
سوال :
نیوکلیوپلازم :- نیوکلیر اینویلوپ کے اندر ایک دانے دار مائع ہوتا ہے اسے نیوکلیوپلازم کہتے ہیں۔نیوکلیوپلازم میں دونیوکلیولائی(داحد نیوکلس) اور کروموسومز پائے جاتے ہیں۔
جواب :-
رائبوسومز  کیا ہیں؟ یہ کہاں پائے جاتے ہیں؟
سوال :
رائبوسومز چھوٹی دانے دار ساختیں ہوتی ہیں۔ یہ یا تو سائیٹوپلازم میں آزادانہ پائی جاتی ہیں یا پھر اینڈوپلازمک ریٹی کولم کے ساتھ منسلک ہوتی ہیں ہر رائبوسوم رائبوسومل آر این اے اور پروٹین کی برابر مقدار سے مل کر بنتا ہے۔ رائبوسومز کے گرد ممبرین نہیں ہوتی۔یہ پرویوکریوٹک سیلز میں بھی موجود ہوتے ہیں لیکن یوکریوٹک سیل کا رائبوسوم پروکریوٹک سیل والے رائبوسوم سے تھوڑا بڑا ہوتا ہے۔
جواب :-
رائبوسومز کا فعل بیان کریں۔
سوال :
روئبوسومز کا فعل :- وہ جگہیں جہاں پروٹینز تیار ہوتی ہیں رائبوسومز ہیں۔سیلز کیلئے پروٹینز کی تیاری بہت اہم ہے اس لئے تمام سیلز میں رائبوسومز بڑی مقدار میں موجود ہوتے ہیں۔ جب کوئی رائبوسوم پروٹین تیار نہ کر رہا ہو تو یہ دو چھوٹی اکائیوں میں بٹ جاتا ہے۔
جواب :-
مائٹوکانڈریا کا فعل بیان کریں۔
سوال :
مائٹوکانڈریا کا فعل:- یہ ایروبک ریسپریشن کے مقامات ہیں یعنی توانائی پیدا کرنے کے بڑے مراکز ہیں۔
جواب :-
کلوروپلاسٹس کیا ہیں؟
سوال :
یہ ڈبل ممبرین میں لپٹے ہوتے ہیں۔ ینکی بیرانی ممبرین ہموار ہوتی ہے اور اندرونی ممبرین کے اندر کلوروپلاسٹ کے سیال مائع سٹروما میں تھیلیاں ہوتی ہیں۔ جن کو تھائیلاکوائڈز کے ڈھیر کو گرینم (جمع گینا) کہتے ہیں۔
جواب :-
کروموپلاسٹس کیا ہیں؟
سوال :
کروموپلاسٹس:- یہ پودوں کے سیلز میں پائے جانے والے دوسری طرح کے پلاسٹڈز ہیں۔ کروموپلاسٹس میں شوخ رنگوں کے پگمنٹس ہوتے ہیں  اور یہ پلاسٹڈز پھولوں کے پیٹلز اور پھلوں کے سیلز میں ہوتے ہیں۔ یہ ان حصوں کو رنگ دیتے ہیں اور اس طرح یہ پولی نیشن اور پھلوں کے بکھراؤ میں معاون ہیں۔
جواب :-
لیوکوپلاسٹس کیا ہیں؟ 
سوال :
لیوکوپلاسٹس :- یہ پلاسٹڈز بے رنگ ہوتے ہیں۔یہ پودوں کے ان حصوں میں پائے جاتے ہیں جہاں خوراک ذخیرہ کی جاتی ہے۔یہ سٹارچ، پروٹینز اور لپڈز کو ذخیرہ کرتے ہیں۔
جواب :-
رف اینڈوپلازمک ریٹی کولم کیا ہیں؟
سوال :
رف اینڈوپلازمک ریٹی کولم:- اس جال کی ظاہری صورت اس کے ساتھ جڑے بے شمار رائبوسومز کی وجہ سے ناہموار ہوتی ہے۔اپنے ساتھ جڑے ہوئے رائبوسومز کی وجہ سے رف اینڈوپلازمک ریٹی کولم پروٹینز کی تیاری میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔
جواب :-
سموتھ اینڈوپلازمک ریٹی کولم کیا ہیں؟
سوال :
سموتھ اینڈوپلازمک ریٹی کولم:- اس اینڈوپلازمک ریٹی کالم کے ساتھ رائبوسومز منسلک نہیں ہوتے۔ یہ لپڈز کے میٹابولزم کے کے علاوہ مختلف مادوں کی سیل کے اندر ایک جگہ سے دوسری جگہ نقل و حمل کا ذمہ دار ہے۔ یہ سیل کے اندر داخل ہونے والے زہریلے مادوں کا زہریلا اثر ختم کرتا ہے۔
جواب :-
گالجی اپریٹس کا فعل بیان کریں۔
سوال :
گالجی اپریٹس کا فعل:- اس کاکام رف اینڈوپلازمک ریٹی کولم سے آنے والے مالیکیولز میں تبدیلی کرکے انہیں چھوٹی چھوٹی ممبرین میں لپٹی ہوئی تھیلیوں میں پیک کرنا ہے۔ گالجی اپریٹس سے بننے والی یہ تھیلیاں گالجی ویزایکلز کہلاتی ہیں۔ اور انہیں سیل کے مختلف حصوں میں اور سیل سے باہر بھیجا جا سکتا ہے۔
جواب :-
سینٹریولز کی ساخت اور فعل لکھیں۔
سوال :
سینٹریولز کی ساخت اور فعل:- یہ سیلز میں پائے جانے والے کھوکھلے سلنڈر نما آرگنیلیز ہیں۔ ایک سینٹریول 9 ٹیوبز پر مشتمل ہوتا ہے ہر ٹیوب میں تین مائیکروٹیوبز ہوتی ہیں جو پروٹینز سے بنتی ہیں۔ جانور کے سیل میں نیوکلئیس کی بیرونی سطح کے قریب دو ٹیوبیولز ہوتے ہیں جو پروٹینز سے بنتی ہیں۔ جانور کے سیل میں نیوکلئیس کی بیرونی سطح کے قریب دو سینٹریولز ہوتے ہیں۔دونوں سینٹیولز کو مجموعی طور پر ایک سینٹروسوم کہتے ہیں۔ یہ سیل ڈویژن کے دوران سپنڈل فائبرز بناتے ہیں۔وہ سیلز جن میں سیلیا فلے جیلا بنتے ہیں۔
جواب :-
سائز اور شکل کے لحاظ سے سیل کی چند مثالیں دیں۔
سوال :
سائز اور شکل :- نروسیلز نروامپلس کی ترسیل کیلئے لمبے ہوتے ہیں۔ پانی اور نمکیات کی ترسیل اور سہارے کیلئے زائلم سیلز موٹی دیوار والے اور ٹیوب کی طرح کے ہوتے ہیں۔ ریڈ بلڈ سیلز گول ہیموگلوبن کو اپنے اندر سمونے کی خاطر گول ہوتے ہیں۔
جواب :-
سیل کے سطحی رقبے اور حجم میں تناسب کے لحاظ سے کردار لکھیں۔
سوال :
سطحی رقبے اور حجم میں تناسب:- روٹ ہیرز سیلز کا سطحی رقبہ پانی اور نمکیات کے زیادہ انجذاب کی خاطر بہت زیادہ ہوتا ہے
جواب :-
سیل کے آرگنیلیزکی موجودگی یا غیرموجودگی کے بارے میں آپ کیا جانتے ہیں؟
سوال :
آرگنیلیزکی موجودگی یا غیرموجودگی:- ایسے سیلز جو سیکریشن بناتے ہیں ان میں اینڈوپلازمک ریٹی کالم اور گالجی اپریٹس بہت زیادہ ہوتے ہیں۔ فوٹوسیتھی سیز کرنے والے سیلز میں کلوروپلاسٹ ہوتا ہے۔
جواب :-
انفرادی سیلز کا مجموعی افعال میں کردار بیان کریں۔
سوال :
انفرادی سیلز کا مجموعی افعال میں کردار:- انفرادی سیلز کا مجموعی افعال میں کردار انسان کے سیلز کی مثالوں سے سمجھا جا سکتا ہے۔
1۔ نرو سیلز نروامپلس کی ترسیل اور جسم کے اندر کوآرڈینیشن میں اہم کردار ادا کرتے ہیں۔
2۔ مسل سیلز سکڑ کر جسم میں ہونے والی حرکات میں اپنا کردار ادا کرتے ہیں۔
3۔ ریڈ بلڈ سیلز جسم کے مختلف حصوں میں آکسیجن پہنچاتے ہیں اور وائٹ بلڈسیلز جسم میں آنے والے بیرونی عناصر کو مارتے ہیں اس طرح دونوں بلڈ سیلز خون کے ٹرانسپورٹیشن میں اور دفعہ کے متعلق افعال میں اہم کردار ادا کرتے ہیں۔
4۔ ہڈیوں کے سیلز اپنے گرد ایکسٹرا سیلولر جگہوں میں کیلشیم جمع کرتے ہیں اور ہڈیوں کے فعل میں حصہ ڈالتے ہیں۔  
جواب :-
ڈفیوژن کی تعریف کریں۔
سوال :
ڈفیوژن:- مالیکیولز کا زیادہ ارتکاز والے علاقے سے کم ارتکاز والے علاقے کی طرف جانا ڈفیوژن کہلاتا ہے۔
جواب :-
فیسیلی ٹیٹڈڈفیوژن کی تعریف لکھیں۔
سوال :
فیسیلی ٹیٹڈڈفیوژن:- مالیکیولز کا زیادہ ارتکاز والے علاقے سے کم ارتکاز والے علاقے کی طرف ٹرانسپورٹ پروٹینز کی مدد سے جانا فیسیلی ٹیٹڈڈفیوژن کہلاتا ہے۔
جواب :-
اوسموسس سے کیا مراد ہے؟
سوال :
اوسموسس:- ایک سیمی پرمی ایبل ممبرین کے آرپار پانی کے مالیکیولز کی حرکت کو اوسموسس کہتے ہیں۔ اوسموسس کے دوران پانی کے مالیکیولز کم ارتکاز والے سولیوشن سے زیادہ ارتکاز والے سولیوشن کی طرف جاتے ہیں۔   
جواب :-
ٹانیسیٹی کی تعریف  اور اصول بیان کریں۔
سوال :
ٹانیسیٹی:- ٹانیسیٹی کا مطلب ہے موازنہ کیے جانے والے دو سولیوشن میں سولیوٹس کی مقدار متناسب ہے۔
زیادہ سولیوٹ والا سولیوشن ہائپرٹانک سولیوشن کہلاتا ہے۔ کم سولیوٹ والے سولیوشن کو ہائپو ٹانک سولیوشن کہتے ہیں۔سولیوٹ کی برابر مقداروں والا سولیوشن آئسوٹانک سولیوشن کہلاتا ہے۔
جواب :-
ایکٹیو ٹرانسپورٹ کی تعریف لکھیں۔
سوال :
ایکٹیو ٹرانسپورٹ:- مالیکیول کی کم ارتکاز والے علاقے سے زیادہ ارتکاز والے علاقے کی طرف حرکت ایکٹیو ٹرانسپورٹ کہلاتی ہے۔  ارتکاز کے مخالف اس حرکت کے لئے اے ٹی پی  کی صورت میں توانائی خرچ ہوتی ہے۔ 
جواب :-
اینڈوسائٹوسس سے کیا مراد ہے؟
سوال :
اینڈوسائٹوسس:-
                   اینڈو سائٹوسس میں سیل اپنی ممبرین کو اندانی طرف موڑ کر زیادہ جسامت والے والے مٹیریلز کو نگلتا ہے اینڈوسائٹوسس کی دو اقسام ہیں:
1۔ فیگوسائٹوسس                    2۔ پائنوسائٹوسس
جواب :-
ایکسوسائٹوسس کی تعریف لکھیں۔
سوال :
ایکسوسائٹوسس:- ایکسوسائٹوسس کے دوران زیادہ جسامت والے مٹیریلز سیل سے باہر نکالے جاتے ہیں اس عمل کے دوران سیل ممبرین میں سے نئی ممبرین کا اضافہ ہو جاتا ہے اور اینڈوسائٹوسس کے دوران کم ہونے والی ممبرین کا بدل ملتا ہے۔
جواب :-
ایپی تھیلیل ٹشو سے کیا مراد ہے؟
سوال :
ایپی تھیلیل ٹشو:- ایپی تھیلیل ٹشو جسم کی بیرانی طرف موجود ہوتے ہیں اور آرگنز کی خالی جگہوں کی اندارنی تہہ بھی بناتے ہیں اور اس طرح کے ٹشو میں سیلز قریب قریب ہوتے ہیں اور ان کے درمیان خالی جگہیں بہت کم ہوتی ہیں۔
جواب :-
ایپی تھیلیل ٹشوز کی اقسام بیان کریں۔
سوال :
ایپی تھیلیل ٹشوز کی یہ اقسام ہیں:
1۔ سکیمس ایپی تھیلیم :- یہ بہت قریب موجود چپٹے سیلز کی تہہ پر مشتمل ہوتے ہیں یہ پھیپھڑوں کے ائرسیکس، دل اور بلڈ ویسلز وغیرہ میں موجود ہوتے ہیں۔ یہ ٹشو مٹیریلز کو اپنے اندر سے گزرنے کی اجازت دیتا ہے۔
2۔ کیوبائڈل ایپی تھیلیم :- مکعب شکل کے سیلز کی ایک تہہ ہوتی ہے گردوں کی نالیوں اور چھوٹے گلینڈز میں موجود ہوتے ہیں یہ ٹشوسیکریشنز بناتے ہیں۔
3۔ کالز ایپی تھیلیم :- یہ لمبوترے سیل کی تہہ پر مشتمل ہوتے ہیں ڈائیجیسٹو کینال اور گال بلیڈر میں موجود ہوتے ہیں یہ اینزائمز پر مشتمل سیکریشنز بناتا ہے۔
4۔ سیلی اینڈ کالمز ایپی تھیلیم:- اس میں سیلیا والے لمبوترے سیلز پائے جاتے ہیں اور یہ اپنے سیلیا کی حرکت سے میوکس کو باہر دھکیلتا ہے۔
5۔ سٹریٹی فائڈسکیمس ایپی تھیلیم:- یہ چپٹے سیل کی کئی تہوں پر مشتمل ہوتا ہے یہ منہ اور ایسوفیگس کی اندرونی دیوار میں جلد کی بیرانی سطح پر موجود ہوتا ہے اور اس کا کام اپنے سے اندرونی طرف ٹشو کی حفاظت ہے۔ 
جواب :-
کنیکٹو ٹشو کی تعریف بیان کریں۔
سوال :
کنیکٹو ٹشو:- یہ ٹشو جوڑنے اور تعلق پیدا کرنے کا کام کرتے ہیں ایپی تھیلیل ٹشو کے برعکس یہ سیلز ایک ایکسٹرا سیلولر میٹرکس میں بکھرے ہوتے ہیں اس ٹشو کی عام مثالیں ہڈی، خون اور کارٹیلیج ہے۔ کارٹیلیج ہڈیوں کے کناروں، بیرونی کان، ناک اور ٹریکیا وغیرہ میں پایا جاتا ہے۔ گردوں کے گرد جلد کے نیچے اور ابڈامن میں پایا جانے والا ایڈی پوز ٹشو بھی کنیکٹو ٹشو کی ایک قسم ہے۔ یہ آرگنز کو سہارا دینے کے علاوہ تونائی بھی مہیا کرتا ہے۔
جواب :-
مسل ٹشو سے کیا مراد ہے؟
سوال :
مسل ٹشو:- یہ لمبے لمبے سیلز کے بنڈلز پر مشتمل ہوتا ہے جن کو مسل فائبر کہتے ہیں یہ جانوروں کے جسم میں سب سے زیادہ پایا جانے والا ٹشو ہے اس ٹشو کے سیلز میں سکڑنے کی صلاحیت ہوتی ہے۔
جواب :-
مسل ٹشو کی اقسام لکھیں۔
سوال :
مسل ٹشو کی یہ اقسام ہیں:  
1۔ سکیلیٹل مسلز
2۔ سموتھ مسلز
3۔ کارڈیک مسلز
جواب :-
سکیلیٹل مسلز کی تعریف کریں۔
سوال :
سکیلیٹل مسلز:- یہ مسلز ایسے دھاری دار سیل پر مشتمل ہوتے ہیں جو لمبے ہیں اور سلنڈر نما ہیں۔ اور ہر سیل میں بہت سے نیوکلیائی ہوتے ہیں یہ جسم میں ہڈیوں کے ساتھ جڑے ہوتے ہیں مثلاً بائی سیپ مسل ہڈیوں کو حرکت دیتے ہیں۔
جواب :-
سموتھ مسلز کی تعریف کریں۔
سوال :
سموتھ مسلز :- سموتھ مسلز اپنے کام کے لحاظ سے غیر ارادی ہیں یہ ایلیمنٹری کینال مثانہ یعنی یورینری بلیڈر اور بلڈ ویسلز کی دیواروں میں پائے جاتے ہیں  یہ مسلز ہموار ہوتے ہیں اور ہر سیل میں ایک نیوکلیس پایا جاتا ہے ان کا کام مختلف مادوں کو نالیوں میں حرکت دینا ہے جیسے خوراک، پیشاب اور خون وغیرہ۔
جواب :-
کارڈیک مسلز  کی تعریف لکھیں۔
سوال :
کارڈیک مسلز:- کارڈیک مسلز دھاری دار سیلز پر مشتمل ہوتے ہیں ۔ اور یہ شاخ دار ہیں ہر ایک میں ایک ہی نیوکلئیس ہوتا ہے یہ دل کی دیواروں میں پائے جاتے ہیں  اور دل کی دھرکن اور ہارٹ بِیٹ پیدا کرتے ہیں۔
جواب :-
ایپی کل میری سٹیمز سے کیا مراد ہے؟
سوال :
یہ جڑوں اور تنوں کے سروں میں ہوتے ہیں ان میں ڈویژن کے عمل سے پودے کی لمبائی میں اضافہ ہوجاتا ہے اور پودوں میں ایسی نشو و نما کو پرائمری نشوو نما کہتے ہیں۔ 
جواب :-
لیٹرل میری سٹیمز  سے کیا مراد ہے؟
سوال :
لیٹرل میری سٹیم : ہیہ ٹشو جڑوں اور تنوں کے اطراف میں ہوتے ہیں میری سٹیمز ڈویژن کے عمل میں پودے اقی پھیلاؤ کا باعث بنتے ہیں اور پودوں کی ایسی نشو و نما سکینڈری گروتھ کہلاتی ہے۔
جواب :-
لیٹرل میری سٹیم کی اقسام لکھیں۔
سوال :
1۔ ویسکولر کیمبیم :- یہ فلوئم اور زائیلم کے درمیان پائی جاتی ہے۔
2۔ کارک  کیمبیم :- یہ بیرونی اطراف میں پائی جاتی ہے اس کے سیلز کارک کی تہہ بناتے ہیں۔
جواب :-
ایپی ڈرمل ٹشو زکی تعریف کریں۔
سوال :
جڑ کے گرد موجود ایپی ڈرمل ٹشوز پانی اور معدنیات کے جذب کرنے کاکام کرتے ہیں یہ ٹشوز تنے اور پتے کے گرد خارج کرتے ہیں ۔
جواب :-
گراؤنڈ ٹشوز کی تعریف لکھیں۔
سوال :
گراؤنڈ ٹشوز:- ان سیلز کی پرائمری سیل وال بہت باریک ہوتی ہے۔ اور اس میں خوراک کے ذخیرہ کیلئے بڑا سا ویکیول ہوتا ہے ان سیلز کو پتوں میں میزوفل کہتے ہیں۔ جہاں فوٹوسنتھی سیز ہوتی ہے جبکہ دوسرے حصوں میں یہ سیلز ریسپیریشن اور پروٹینز کی تیاری کا کام کرتے ہیں۔
جواب :-
کولن کائمہ ٹشوز  کی تعریف لکھیں۔
سوال :
کولن کائمہ ٹشوز:- یہ ایپی ڈرمس کے نیچے نئے تنوں کے کارٹیکس ، پتوں کی مڈرب اور پھولوں کت پیٹلز میں پائے جاتے ہیں ان کے سیلز لمبے ہوتے ہیں ان کی پرائمری سیل وال غیر ہموار طریقے سے موٹی ہوتی ہے یہ لچکدار ٹشوز ہیں اور ان کا کام آرگنز کو سہارا دینا ہے۔ جن میں یہ پائے جاتے ہیں ۔

سکلیرن کائمہ ٹشوز  سے کیا مراد ہے؟
سوال :
سکلیرن کائمہ ٹشوز:- یہ ٹشوز ایسے سیلز سے ملکر بنتے ہیں جن کی سیکنڈری وال بے لچک ہوتی ہے ان سیل والز کی سختی کی وجہ لگنن ہے جو لکڑی میں سب سے زیادہ پایا جانے والا کیمیکل ہے ۔ بالغ سکلیرن کائمہ سیلز مزید لمبے نہیں ہو سکتے ہیں اور ان میں سے زیادہ تر مر جاتے ہیں ۔
جواب :-
زائیلم  ٹشو کی اقسام لکھیں۔
سوال :
1۔ ویسل ایلیمنٹس یا سیلز :- یہ چھوٹے یا چھوڑے سیلز ہوتے ہیں جن کی سیکنڈری وال موٹی ہوتی ہے یہ مردہ اور کھوکھلے  سیلز ہیں ان کی اختتامی والز نہیں ہوتیں۔ اور یہ ایک دوسرے سے ملکر لمبی ٹیوبز بناتے ہیں ۔
2۔ ٹریکیڈز :- ٹریکیڈز لمبے اور پتلے سیلز ہیں ان کے کنارے ایک دوسرے کو ڈھانپے ہوئے ہیں پانی ایک سے دوسرے ٹریکیڈ میں اوپر کی سمت حرکت کرتا ہے۔
جواب :-
سیوٹیوب سیلز کی تعریف لکھیں۔
سوال :
سیوٹیوب سیلز :-
                  یہ سیلز لمبے ہوتے ہیں اور ان کی اختتامی سیل واکز میں چھوٹے چھوٹے سوراخ ہوتے ہیں بہت سی سیو ٹیوبز سیلز ملکر لمبی سیوٹیوبز بناتے ہیں۔
جواب :-
کیمپینین سیلز کی تعریف لکھیں۔
سوال :
ان سیلز کا کام سیوٹیوب سیلز کیلئے پروٹینز تیار کرنا ہے۔
جواب :-




























Post a comment

0 Comments