Latest Article

header ads

9th_Biology_Chapter : 6



9thBIOLOGY             Chapter No 6           C h TAHIR RAFIQ




Ch Tahir Rafiq

Biology : 9th
CHAPTER NO. 6
اینزائمز
SHORT QUESTIONS & ANSWERS
میٹابولیزم سے کیا مراد ہے؟
سوال :
میٹابولیزم کی اصطلاح ایک یونانی لفظ سے اخذ کی گئی ہے۔ جس کے معنی "تبدیلی" ہیں۔ ابنِ نفیس نے سب سے ہیلے میٹابولیزم کا تصور دیا تھا۔  ابنِ نفیس کے مطابق جسم اور اس کے حصے ہمیشہ تبدیلیوں سے گزر رہے ہوتے ہیں۔
جواب :-
کیٹابولزم کی تعریف لکھیں۔
سوال :
کیٹابولزم :- ایسے بائیوکیمیکل ری ایکشنز جن میں مالیکیولز کو توڑا جاتا ہے کیٹابولزم کے دوران توانائی  کا اخراج ہوتا ہے اور کیٹا بولزم کے ذریعے جو پروڈکٹس حاصل ہوتے ہیں ان کو اینابولک عمل کے ذریعے سے دوبارہ جوڑ کر نئے مالیکیولز بنا لیے جاتے ہیں۔
جواب :-
اینابولزم  کی تعریف لکھیں۔
سوال :
اینابولزم :- ایسے بائیوکیمیکل ری ایکشنز جن میں کمپاؤنڈ بنائے جاتے ہیں ۔
جواب :-
اینزائمز کی تعریف لکھیں۔
سوال :
اینزائمز :- اینزائمز سے مراد ایسے پروٹینز ہیں جو بائیو کیمیکل ری ایکشنز پر عمل کرتی ہیں اور انہیں تیز کرتی ہیں لیکن ری ایکشن کے دوران خود کسی تبدیلی سے نہیں گزرتیں اور یہ ری ایکشن کی ایکٹیویشن انرجی کو کم کرتی ہیں ۔
جواب :-
ایکٹیویشن انرجی کی تعریف لکھیں۔
سوال :
ایکٹیویشن :- ایکٹیویشن انرجی وہ کم سے کم توانائی ہے جو کسی ری ایکشن کت آغاز کیلئے ضروری ہوتی ہے۔ کیمیکل بانڈ کو توڑنے اور ری ایکشن کے آغاز کیلئے ایکٹیویشن انرجی کی ضرورت ہوتی ہے۔
جواب :-
انزائمز کیسے ایکٹیویشن انرجی کو کم کرتے ہیں؟
سوال :
انزائمز   ایکٹیویشن انرجی کودرج ذیل طریقوں سے کم  کرتے ہیں۔
1۔ سبسٹریٹس کی شکل تبدیل کرتے ہیں اس طرح اس تبدیلی کیلئے انرجی کی ضرورت کم ہو جاتی ہے۔
2۔ مالیکیلولز پر موجود چارج کی تقسیم میں خلل ڈال کر ۔
3۔ سبسٹریٹس کو عمل کیلئے درست سمتوں اور مقامات پر لاتے ہیں ۔
جواب :-
ایکٹیوسائیٹ کی تعریف لکھیں۔
سوال :
ایکٹیوسائیٹ :- کیٹالاسز میں اینزائمز کا مالیکیول چھوٹا سا حصہ ہی شامل ہوتا ہے یہ حصہ ایکٹیو سائیٹ کہلاتا ہے۔ ایکٹیو سائیٹ سبسٹریٹ کی پہچان کرتی ہے اور اس کے ساتھ جڑ جاتی ہے پھر اس کا ری ایکشن کروا دیتی ہے۔
جواب :-
کو۔فیکٹرز سے کیا مراد ہے؟
سوال :
کو۔فیکٹرز :- زیادہ تر اینزائمز کام کرنے کیلئے نان پروٹین مالیکیولز چاہتے ہیں جنہیں کو فیکٹرز کہتے ہیں۔
جواب :-
پراستھیٹک گروپ سے کیا مراد ہے؟
سوال :
پراستھیٹک گروپ :- اگر آرگینک کو۔فیکٹرز اینزائمز کے ساتھ مضبوطی سے بندھے ہوں تو یہ سراستھیٹک گروپ کہلاتا ہے۔
جواب :-
کو۔اینزائمز سے کیا مراد ہے؟
سوال :
کو۔اینزائمز :-  یہ اینزائمز کے ساتھ کمزور جوڑ بناتے ہیں تو یہ کو اینزائم کہلاتے ہیں۔
جواب :-
میٹابولک سلسلے سے کیا مراد ہے؟
سوال :
میٹابولک سلسلے :- بہت سے اینزائمز مخصوص ترتیب کے ساتھ اکٹھے کام کرتے ہیں  جس سے میٹابولک سلسلے بنتے ہیں ۔ ایک میٹابولک سلسلہ میں ایک اینزائم دوسرے اینزائم کے  پیدہ کردہ پراڈکٹ کو اپنے سبسٹریٹ کے طور پر لیتا ہے۔ کیٹابولک ری ایکشن میں بننے والا نیا پراڈکٹ اگلے اینزائم کو دیا جاتا ہے۔
جواب :-
اینزئمز کے استعمالات بیان کریں۔
سوال :
تیز رفتار ری ایکشنز کیلئے مختلف صنعتوں میں اینزائمز کا بہت زیادہ استعمال کیا جاتا ہے۔
1۔ خوراک کی صنعت :- اینزئمز جو سٹارچ کو سادہ شوگر میں توڑتے ہیں انہیں سفید روٹی ، بنز اور رولز بنانے کیلئے استعمال میں لایا جاتا ہے۔
الکحل صنعت :- اینزائمز سٹارچ اور پروٹینز کو توڑتے ہیں ۔جن کو ییسٹ الکحل بنانے کیلئے فرمینٹیشن میں استعمال کرتا ہے۔
کاغذ کی صنعت :- اینزائمز کا ایک اور  اہم کام سٹرچ کو توڑ کر اس کا گاڑھا پن کم کرنا ہے جو کاغذ کی تیاری میں مدد دیتا ہے۔ 
بائیولوجیکل ڈیٹرجنٹ :- کپڑوں پر لگے پروٹینز کے دھبے اتارنے کیلئے پروٹی ایز اینزائمز استعمال ہوتے ہیں۔ ایمائلیز اینزائمز برتن دھونے میں استعمال ہوتے ہیں اور ان پر لگے ہوئے سٹارچ کے مزاحم رسوب اتارتے ہیں۔
جواب :-
ٹمپریچر کس طرح اینزائم ایکشن کی رفتار پر اثرانداز ہوتا ہے ؟
سوال :
ہر اینزائم مخصوص ٹمپریچر پر تیز رفتار کے ساتھ کام کرتا ہے اسے اینزائم کا مناسب ترین  یعنی آپٹیمم ٹمپریچر کہتے ہیں۔
جواب :-
اینزائمز کا ڈی نیچر ہونا کسے کہتے ہیں؟
سوال :
جب ٹمپریچر آپٹیمم سے بڑھ جائے تو زیادہ حرارت سے اینزائمز کے  مالیکیولز میں ارتعاش بڑھ جاتا ہے اور اینزائمز کا گلوہیولر سٹرکچر قائم نہیں رہتا، اسے اینزائمز کا ڈی نیچر ہونا کہتے ہیں۔
جواب :-
  Hp کسے کہتے ہیں؟
سوال :
Hp کی تنگ حدود کے اند ہی تمام اینزائمز تیز ترین رفتار سے کام کرتے ہیں یہ حدود اینزائمز کی Hp کہلاتی ہے۔
جواب :-
لاک اینڈ کی ماڈل بیان کریں۔
سوال :
1894ء میں جرمن کیمسٹ ایمل فشر نے اینزائم ایکشن کی وضاحت کیلئے لاک اینڈ کی ماڈل پیش کیا۔ اس ماڈل کے مطابق اینزائمز اور سبسٹریٹ دونوں کی اشکال مخصوص ہوتی ہیں اور دونوں ایک دوسرے میں مکمل طور پر فٹ ہوجاتےہیں اس ماڈل سے اینزائمز کے مخصوص ہونے کی وضاحت حاصل ہوتی ہے۔
جواب :-
انڈیوسڈ ماڈل فٹ ماڈل بیان کریں۔
سوال :
1958ء میں ایک امریکی بائیولوجسٹ ڈینیئل کوشلینڈ نے لاک اینڈ کی ماڈل کی میں تبدیلی کی تجویز دی اور انڈیوسڈ فٹ ماڈل پیش کر کے اینزائم ایکشن کی وضاحت کی۔یہ ماڈل لاک اینڈ کی ماڈل کی نسبت زیادہ قابل قبول ہے۔  اس میں ڈینیئل کوشلینڈ نے بتایا کہ اینزائمز لچکدار اجسام ہیں  اور انکی ایکٹیو سائٹ جب سبسٹریٹ سے ملتی ہے تو اپنی شکل تبدیل کر لیتی ہے ۔ اس ماڈل کی رو سے ایکٹوسائٹ کوئی بے لچک ساخت نہیں ہے بلکہ اپنے کام کو کرنے کیلئے یہ مناسب اور درست حالت میں ڈھل جاتی ہے۔
جواب :-
اینزائمز کی تخصیص کس لحاظ سے ہوتی ہے؟
سوال :
تقریباً 2000 سے زائد اینزائمز کے بارے میں معلام کیا جا چکا ہے اور ان میں سے ہر ایک کسی مخسوص کیمیکل ری ایکشن میں شامل ہوتا ہے۔
1۔ سبسٹریٹس کے لحاظ سے :- سبسٹریٹس کے لحاظ سے اینزائمز مخصوص ہوتے ہیں ۔ مثلاً اینزائم پروٹی ایز سٹارچ پر عمل نہیں کرتا  یہ پروٹینز میں موجود پیپٹائڈز بانڈ توڑتا ہے جبکہ سٹارچ کا مخصوص اینزائم ایمائی لیز ہے۔ جس سے یہ ٹوٹتا ہے۔ اینزائم لائی پیز صرف لپڈز کیلئے مخصوص ہے اور انہیں فیٹی ایسڈ اور گلیسرول  میں ڈائی جیسٹ کرتا ہے۔
2۔ ایکٹوسائٹس کی شکل کے لحاظ سے :- اینزائمز کا مخصوص ہونا ان کی ایکٹوسائٹس کی شکل پر بھی منحصر ہے۔ ایکٹیو سائٹس کی مخصوص جیومیٹریکل  اشکال ہوتی ہیں جو مخصوص سبسٹیٹس کے ساتھ جڑی ہیں یا ٖفٹ ہوتی ہیں۔
جواب :-









Clik Hare subscribe 
                                                                         Downloded


















Post a Comment

0 Comments